معدے کی سوزش اور ورم کا علاج

اس مرض میں معدہ کی اندرونی لعاب دار جھلی شدید متورم ہوجاتی ہے معدے کی جھلی سرخ ہوجاتی ہے اور معدے سے زہریلی رطوبت بکثرت خارج ہوتی ہے۔آہستہ آہستہ سارا معدہ متاثر ہوجاتا ہےیہ معدہ کی ایک بیماری نہیں ہے بلکہ معدہ کی کئی جملہ امراض کے نتیجے میں پیدا ہونے والا مرض ہے ایک اندازے کے مطابق اس مرض سے تقریبا 2.25 ملین افراد ہر سال موت کا شکار ہوتے ہیں ۔ابتداء میں معدے میں جلن اور درد ہوتی ہے ۔پیاس لگتی ہے معدے میں کھانا اور پانی وغیرہ نہیں ٹھہرتا۔

بد ہضمی کی سی صورت ہوتی ہے اور ہلکا بخار بھی ہو جاتا ہے۔پتلے پتلے دست خارج ہوتے ہیں۔بلغم میں خون آتا ہے متلی اور قے آتی ہے۔یہ مرض زیادہ تر ان لوگوں میں ہوتی ہے جو شراب پیتے ہیں اور سگ ریٹ نوش ی کرتے ہیں لیکن کوئی بھی زہ ریل ی شے کھانے کے بعد مریض کے معدے کی نرم جھلی تباہ ہوجاتی ہے بعض اوقات بوسیدہ گوشت کھانے سے بھی یہ مرض پیدا ہوجاتی ہے معدے میں سوزش اور زخم ہوجاتے ہیں یہ سوزش آنتوں میں بھی پھیل جاتی ہے اگر بہ وقت علاج نہ کیا جائے تو یہ صورت حال انتہائی خطر ناک ہوسکتی ہے۔معدے کی سوزش ایک جراثیم ہلسیکوبیکٹرپیلورائی سے ہوتی ہے۔باسی اور خراب کھانا،مصالحۃ دار سالن ترش اشیاء،سگریٹ نوشی اور شراب نوشی اس مرض کی اہم ترین وجوہات میں شامل ہیں۔زیادہ ادویات کا استعمال اس مرض کی وجہ بن سکتا ہے۔شدید قے سے معدہ خالی ہونے سے بھی یہ مرض لا حق ہوسکتا ہے۔

ابتدائی طبی امداد کے طور پر سب سے پہلے مریض کو جتنا ممکن ہو پانی پلائیں۔سوڈیم بائی کارب پانی میں ملا کر پلائیں لیموں کا رس یا سرکہ بھی پانی میں ملا کر پلاکستے ہیں۔اگر مریض نے سنکھیا کھایا ہو تو مریض کو دودھ اور کچے انڈے کی سفیدی پلائیں مریض کو ہوادار کمرے میں رکھیں ۔شدید بیماری کی صورت میں کسی مستند ڈاکٹر سے رجوع کریں۔مریض کو ہلکی غذا دیں۔صاف ستھری اور سادہ غذا استعمال کریں۔ چٹ پٹی اور مصالحہ دار اشیاء سے ممکن حدتک پرہیز کریں۔سگریٹ نوشی اور شراب نوشی سے مکمل اجتناب کریں نشہ آور ادویات نہ کھائیں۔اگر سر میں درد، جسم میں تھکاوٹ کمزوری، قبض اور پاخانہ درد وجلن کے ساتھ ہو یعنی بواسیر کی علامات ظاہر ہو رہی ہوں یا پاخانہ میں خون خارج ہوتا ہو تو جوارش جالینوس ایک چھوٹا چمچ رات کے کھانے کے بعد پانی کے ساتھ، جوارش کمونی ناشتہ کے بعد ایک چھوٹا چمچ پانی کے ساتھ۔ چار عدد انجیر دوپہر کے کھانے کے بعد نیم گرم دودھ کے ساتھ۔ مدت علاج دو مہینے۔

معدہ کی تکالیف کی وجہ سے نظر اور دماغ کمزور ہو گیا ہو، قبض کا احساس ہو اور کھانا ہضم نہ ہوتا ہو، سر میں درد، چکر ، آدھے سر کا درد ہو تو ایسی علامات میں شربتِ فولاد دو چمچ صبح شام، اطریفل اسطخودوس رات میں ایک چھوٹا چمچ، مربہ ہریڑ چار عدد نیم گرم دودھ کے ساتھ رات میں۔ مدت علاج دو ماہ۔ اگر سینہ میں جلن، تبخیر، قے اور معدہ میں درد کا احساس ہو تو یہ علامات بنیادی طور پر السر کی طرف اشارہ کر رہی ہیں اس کی تشخیص براہِ راست مشاورت اور چیک اپ کے بغیر نا ممکن ہے۔ اس لئیے اپنے طبیب سے ضرور ملیں۔ کچھ مفید تراکیب و علاج یہ ہیں کہ ایسے مریض کو ہلدی کے زیرو سائز کیپسول بنا کر دیں، دو کیپسول صبح شام پانی کے ساتھ۔ زیادہ سے زیادہ مائع خوراک بشکل دودھ، جوس اور صاف پانی دیں۔ میٹھا اور ترش چیزوں سے پرہیز۔اللہ ہم سب کو تمام بیماریوں سے محفوظ رکھے ۔آمین

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *