اگر 8سال سے اولاد نہیں تھی وظیفہ کرتے ہی جڑواں بیٹے ہوئے ،سات مرتبہ سورۃ فاتحہ کا عمل

السلام علیکم دوستو کیسے ہو امید ہے، کہ آپ سب ٹھیک ٹھاک ہونگے

حضرت معاذبن انس سے روایت ہے کہ رسولِ اکرم ﷺ نے ارشاد فرمایا:

جو شخص اپنا غصہ اتارنے اور بدلہ لینے پر قادر ہو اور اس کے باوجود وہ اپنے غصہ کو دبائے اور قابو میں رکھے تو اللہ تعالیٰ اس کو قیامت کے دن مخلوق کے سامنے بلائیں گے اور اختیار دیں گے کہ وہ جنت کی آہو چشم حوروں میں سے جس کو چاہے لے لے۔ (ترمذی) حضرت ابوہریرہ ؓ سے روایت ہے۔

کہ ایک شخص نے رسول اللہ ﷺ سے عرض کیا: یا رسول اللہﷺ آپ مجھے کوئی وصیت فرمائیے۔ جس پر میں عمر بھر کاربند رہوں، آپ نے فرمایا : غصہ کبھی مت کرنا، راوی کہتے ہیں اس شخص نے اپنی کوتاہ فہمی کی وجہ سے باربار یہی سوال لوٹایا، مجھے وصیت کیجیے، آپ نے ہر مرتبہ یہی جواب دیا، غصہ کبھی مت کرنا۔ (صحیح بخاری) کسی شخص کی کامیابی اور بلندی کا راز یہ ہے کہ انتہائی جذباتی مواقع پر انتہائی عقل و دانش سے فیصلہ کرے۔ انفرادی زندگی میں تحمل اور صبر و ضبط کی ضرورت تو ہے ہی؛ لیکن اس کی اہمیت اجتماعی جگہوں میں مزید بڑھ جاتی ہے، جہاں مختلف اذہان اور طبیعت کے لوگوں سے واسطہ پڑتا ہے ۔

اس میں بعض کی موافقت ہوگی تو بعض کی مخالفت بھی، ساتھ رہتے ہوئے بہت سی ناموافق باتیں بھی پیش آتی ہیں، کبھی مزاجوں کا اختلاف دل شکنی کا باعث ہوتا ہے تو کبھی کسی کی تنقید سے خفت اٹھانی پڑتی ہے؛ بلکہ قدم قدم پر ہزار امتحانی راہوں سے گزرنا پڑتا ہے، اگر تحمل اور صبر و ضبط سے کام نہ لیا جائے تو ایک دن بھی اجتماعی جگہوں میں شریک رہنا مشکل ہوگا۔ اس طرح سماجی تنظیموں اور اداروں کا نقصان تو ہوگا ہی؛ مگر خود اس کی زندگی تباہ اور ناکارہ ہوجائے گی، ہزار صلاحیتوں کے باوجود اس کا علم و ہنر بے فیض اور ناکام ہوگا؛ اس لیے اپنی شخصیت کو نکھارنے.

مسائل سے نجات پانے اور خوش گوار زندگی گزارنے کے لیے ضرورت ہے کہ جذبات کو قابو میں رکھا جائے۔یہ وظیفہ بہت ہی زیادہ طاقتور ہے زیادہ وقت بھی نہیں لیتا چھوٹے سے وقت میں اس کو کرنا ہے انشاء اللہ تھوڑے سے وقت میں آپ کی حاجت پوری ہوجائیگی ۔ آپ نے کسی بھی وقت کوئی وقت مقرر نہیں ہے بیٹھ کر دو رکعت صلاۃ الحاجت کے پڑھنے ہیں ۔پھر اس کے بعد اول گیارہ مرتبہ درود شریف پڑھنا ہے اور سات مرتبہ سورۃ الفاتحہ اور ایک تسبیح ایاک نعبدُ وایاک نستعین۔

آخر میں گیارہ مرتبہ درود شریف پڑھنا ہے ۔ ایک گلاس پانی پاس رکھ لینا ہے اور اس پر پھونک مار دینی ہے ۔جب اس پرپھونک ماردیں گے آپ کا وظیفہ پورا ہوجائیگا آپ نے اس کو سائیڈ پر رکھ دینا ہے پھر دعا کیلئے ہاتھ اٹھانے اور اللہ تعالیٰ سے دعا مانگنی ہے یااللہ اکیلی ذات تو آپ کی اچھی لگتی ہے ہم تو اولاد والے اچھے لگتے ہیں یہ اس وظیفہ کا حصہ ہے جب آپ اس دعا مانگیں گے تو اللہ تعالیٰ اپنے فضل وکرم سے آپ کو اولاد نرنیہ عطاء فرمائے گا۔اللہ تعالیٰ ہم سب مسلمانوں کو پانچ وقت کا نمازی بنائے۔

نوٹ: آپ نے بھی سنا ھو گا کی اچھی بات دوسروں تک پہنچانا ایک صدقہ جاریا ہے ۔۔۔ اگر آپ کو یہ پوسٹ اچھی لگی ھے تو ھم آپ سے گزارش کرتے ھیں کہ اس پوسٹ کو زیادہ سے زیادہ شئیر کریں
اپنے دوستوں میں اور چاہنے والوں میں۔۔۔۔
اللّہ تعالٰی ہمیں بھی پیارے نبی صلی اللّہ علیہ وسلم کی سنتوں پر عمل کی توفیق عطا فرمائے ۔ آمین یا رب العالمین.

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.