””وعدہ کرو سونے سے پہلے 10 منٹ یہ وظیفہ““

کوئی بھی ادھا ر پیسہ نہیں دیتا۔ آجکل کا جو دور گزررہا ہے۔ حتی ٰ کہ جوآپ کا بہن بھائی ہے۔ وہ آپ کو پیسے نہیں دے سکتا۔ کیونکہ اخراجات اتنے زیادہ ہوں گئے ہیں۔ مہنگائی اتنی زیادہ ہوگئی ہے۔ ہر چیز کی قیمتیں آسمان کو چھو رہی ہیں۔ صرف اللہ تعالیٰ سے دعاکریں ۔ اللہ تعالیٰ کو گڑگڑ ا کر دعا مانگا کریں ۔ اللہ تعالیٰ آپ کو ضرور عطا فرماد ے گا۔ آپ کی جو محتاجی ہے۔

آپ کو جو پیسوں کی ٹینشن ہوتی ہے۔ رزق کی کمی کا شکار ہیں۔ اس نام کو رات سونے سے پہلے پڑھ لینا ہے۔ اللہ تعالیٰ بہت زیادہ نواز دے گا۔ یہ اللہ تعالیٰ کا صفاتی نام ہے۔ وہ نام “یامعطی” :اے ہمیشہ دینے والے، بہت مباک نام ہے۔ اللہ تعالیٰ کا بہت ہی صفاتی نام ہے۔ آپ نے اس عمل کو کرلینا ہے۔ اسکے بعد آپ خود اس کا معجزہ دیکھ لینا۔ کہ اللہ پا ک آپ کو کیسے خالی جیبوں کو بھر دیا ہے۔

اللہ تعالیٰ نے کیسے آپ ک نواز دیا ہے۔ آپ خود دیکھ کر حیران رہ جائیں گے۔ یہ بہت مبارک عمل ہے۔ بہت فضیلت والا عمل ہے۔ جس بھائی نے یہ عمل کرنا ہے۔ جس بہن نے بھی یہ عمل کرنا ہے۔ اس وظیفہ اس عمل کی اجازت ہے۔ اس وظیفے کا پورے طریقہ کار یہ ہے کہ دعاکےوقت بھی اس کو کرلیں۔ اور دعا کے وقت جو پورا پڑھنا ہے۔ “یا معطی السائلین ” ۔

انشاءاللہ! دعا آپ کی قبول ہوگی۔ جس مقصد کے لیے ہوگی آپ کی دعا قبول ہوگی۔ اس کے ساتھ ساتھ آپ اس عمل کوروزانہ رات سونے سے پہلے د س منٹ یہ پڑھتے پڑھتے سوجائیں۔ دوسرے دن آپ دیکھ لینا ۔ معجزہ آپ کی آنکھوں کے سامنے ہوگا۔ ہمارا پروردگار ! آپ کو بہت زیادہ رزق عطا فرماد ے گا ۔ اللہ کے لیے کچھ بھی ناممکن نہیں ہے۔ اللہ تعالیٰ جس کو چاہے دینا دے سکتا ہے۔

جس سے چاہیے لینا چھین سکتا ہے۔ یہ ناممکن جو ہے یہ ہماری زندگیوں میں ہے۔ اللہ کے لیے کچھ بھی ناممکن نہیں ہے۔ اللہ تعالیٰ جب کسی کو دینے پر آجاتا ہے پھر اس کو اتنا نواز دیتا ہے۔ کہ اسے سمجھ نہیں آتی۔ بس آپ لوگوں نے وہی کام کرنا ہے جو اللہ کی رضا کے مطا بق ہے۔ اللہ تعالیٰ اپنے بندوں سے فرماتا ہے : ایک میری چاہت ہے۔ ایک تیری چاہت ہے۔ ہوگاتو وہی جو میری چاہت ہے۔

پس اگر تم نے سپر د کردیا اپنے آپ کو جو میری چاہت ہے۔ تو وہ بھی ملے گا جو تیری چاہت ہے۔ اگر تو نے مخالفت ہے۔ جو میری چاہت ہے۔ تو میں تھکا دوں گا جو تیر ی چاہت ہے ۔ پھر ہوگا تو ہی جو میری چاہت ہے۔ اس لیے ہونا تو وہی ہے جو اللہ کی چاہت ہے۔ اپنے آپ کو اپنے جسم کو اپنے وجود کو اپنے ضمیر کو ایسا بنا لیں۔ جس طرح اللہ تعالیٰ چاہتا ہے۔ انشاءاللہ! پھر دیکھنا میں کوئی کام آپ کے لیے رکا ہوا نہیں ہے۔ آپ کی زندگی کی جتنی مشکلات ہوں گی۔ آپ کی زندگی کی جتنے بھی مسائل ہوں گے ۔و ہ ختم ہوتے چلے جائیں گے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.