تمہاری بیوی اگر یہ چار کام کرتی ہے

اعوذ باللہ من شیطان الرجیم بسم اللہ الرحمٰن الرحیم اسلام علیکم ناظرین امید کرتا ہوں کہ آپ سب خیریت سے ہوں گے لاکھوں کروڑوں درود اور سلام نبی کریم محمد مصطفی احمد مجتبیٰ صلی اللہ علیہ وآلہٖ وسلم پر جو وجہ تخلیق کائنات بھی ہیں اور فخر موجودات بھی خواتین و حضرات آج کی ویڈیو میں ہم آپ کو خوش آمدید کہتے ہیں آج کی اس ویڈیو میں ہم آپ سے وفادار اور بے وفا بیوی کی نشانیاں ڈسکس کریں گے اور یہ بتائیں گے کہ حضرت علی کرم اللہ وجہہ الکریم نے اس حوالے سے کیا فرمایا ناظرین سے پہلے کچھ تعارف حضرت علی کرم اللہ کا بتاتا چلوں امیرالمومنین حضرت علی کرم اللہ وجہ الکریم خاندان بنی ہاشم کے چشم و چراغ تھے یہ خاندان حرم کعبہ کی خدمات سکھایا زمزم کے انتظامات کی نگرانی اور حجاج کرام کے ساتھ تعاون کے لحاظ مکہ کا ممتاز خاندان تھا علاوہ ازیں بنی ہاشم کو سب سے بڑا اشرف اللہ تعالی کی بارگاہ سے نصیب ہوا وہ نبی آخر الزماں حضرت محمد مصطفی

صلی اللہ علیہ وسلم کی بعثت ہے جو اسے تمام اعزازات سے بلند تر ہے حضرت علی کے والد ابو طالب اور والدہ فاطمہ دونوں ہاشمی تھے اس طرح حضرت علی نجیب الطرفین ہاشمی پیدا ہوئے علی رضی اللہ عنہ کو بچپن ہی سے حضور نبی کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم سے تعلیم و تربیت کا جو موقع ملا تھا اس کا سلسلہ ہمیشہ قائم رہا اکثر سفر میں بھی آنحضور صلی اللہ علیہ وسلم کی رفاقت کا شرف حاصل ہوتا ہے یہ سفر سے متعلق شرعی احکام سے واقفیت حاصل ہو جاتی تھی اس سے موزوں پر مسح کے متعلق سوال کیا گیا تو انہوں نے حضرت علی سے پوچھنے کی ہدایت کی اور اس کی وجہ یہ بیان کی کہ وہ حضور نبی کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے ساتھ سفر کرتے تھے حضرت علی رضی اللہ انہوں نے بچپن ہی میں لکھنے پڑھنے کی تعلیم حاصل کر لی تھی چنانچہ اسلام لانے کے بعد اگرچہ آپ کی عمر بہت کم تھی تاہم آپ نہ پڑھنا جانتے تھے اس لئے ابتداء ہی سے بعض دوسرے صحابہ کی طرح حضرت علی بھی نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے کاتب وحی قرار علیہ وسلم کی طرف سے بعض اوقات یوں فراہمی حضرت علی کے دست مبارک سے لکھے ہوئے تھے حدیبیہ کا صلح نامہ بھی حضرت علی نے لکھا تھا اللہ عنہما کے شروع

میں انہوں نے لکھا یہ صلح نامہ محمد رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہٖ وسلم اور مکہ کے قریش کے درمیان طے پایا ہے اس پر قریش مکہ کے نمائندوں نے اعتراض کیا کہ ہم تو محمد کو اللہ کے رسول مانتے ہی نہیں حضور نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے حضرت علی سے ارشاد فرمایا کہ رسول اللہ کے الفاظ کارڈ دوہزار تعالی نے فرمایا ان الفاظ کو میں اپنے ہاتھ سے نہیں مٹا سکتا کیونکہ یہ حقیقت پر مبنی ہے اس پر حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے خود اپنے دست مبارک سے ان الفاظ کو کاٹ دیا تو محترم ناظرین یہ تھی حضرت علی کی سیرت کا وہ انتہائی مختصر خلاصہ جس سے ان کی علمی اہمیت کا بخوبی اندازہ ہوتا ہے اور پھر نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم ان کی لاڈلی بیٹی اماں فاطمہ کے شوہر کے بارے میں نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کی وہ حدیث مبارکہ کون نہیں جانتا کہ میں علم کا شہر ہوں اور علی اس کا دروازہ ہے نہ بنائے چلتے ہیں آج کی ویڈیو کی جانب ہر روز ایک شخص حضرت علی کرم اللہ وجہ الکریم کی بارگاہ میں حاضر ہوا اور کہنے لگا حضرت علی کو پسند کرتا ہوں اور اس سے نکاح کرنا چاہتا ہوں لیکن ایک سوال ہے کہ کیا وہ میرے لئے وفادار ثابت ہوگی یا نہیں

حضرت علی رضی اللہ انہوں نے فرمایا اے شخص یاد رکھنا جو عورت اپنے والدین کی توہین کرتی ہے اور وہ عورت جو دوسروں کے سامنے اپنے گھر کی شکایت کرتی ہے تو سمجھ جانا وہ اچھی بیوی ثابت نہیں ہوگی عورت کی فطرت میں چھپنا اور چھپانا ہے جو عورت اپنے گھر کے کسی اور کے سامنے واضح کرے تو سمجھ جاؤ کہ وہ عورت نہیں تو اس نے کہا علی کوئی ایسا عمل کوئی ایسی دعا جس سے واضح ہو جائے کہ یہ عورت میرے لئے وفادار ثابت نہیں ہوگی تو حضرت علی رضی اللہ انہوں نے فرمایا اے شخص اس دنیا میں سب سے بہترین عمل ہے تمام گناہوں کی جڑ ہے یاد رکھنا جس عورت کی فطرت میں جھوٹ فریب دھوکہ دہی ہو وہ عورت کبھی بھی کسی کا ساتھ نہیں دے سکتی اگر ان چیزوں پر عمل کیا جائے تو ہم سبق سیکھ سکتے ہیں اور ہماری زندگی آسان ہو سکتی ہے اور ہمیں یہ چیز جاننے میں آسانی ہو سکتی ہے کہ کون وفادار ہے اور کون بے وفا حضرت علی رضی اللہ انہوں نے جو چیزیں بتائیں ہیں اس کے مطابق جو عورت اپنے والدین کی توہین کرتی ہے یعنی کہ وہ اسے اس دنیا میں لے کر آئے ہیں ان کے خلاف باتیں کرتی ہے تو ایسی عورت کسی بھی طرح اچھی نہیں اور وہ عورت جو اپنے گھر کی بات باہر جاکر کرتی ہے

یعنی وہ کل کو آپ کی باتیں بھی دو سو سے کرے گی آپ کی شکایات بھی دوسروں سے کرے گی اس لئے وہ عورت آپ کے لیے بہتر نہیں ہے خواتین و حضرات یہ کچھ نشانیاں تھیں جن کے بارے میں ہم نے آپ کو آگاہ کیا کہ کونسی عورت وفادار ثابت ہو سکتی ہے اور کون سی عورت آپ کے لیے بے وفا ثابت ہوگی آئے آباد کرتے ہیں بابرکت خواتین کے بارے میں جن سے شادی کرنا آپ کے لیے اچھا ثابت ہوگا ام المومنین حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہ فرماتی ہیں کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے ارشاد فرمایا جن عورتوں میں یہ نشانیاں ہوں وہ بہت ہی بابرکت ہوتی ہیں ایسی عورتوں سے شادی کر لیا کرو عورت کے بابرکت ہونے کی علامات میں سے ہے کہ نمبر1 اس کی طرف رشتہ بھیجنے اور رشتہ منظور ہونے میں آسانی ہو نمبر دو اس کا مہر آسان ہو یعنی بہت زیادہ پیچیدہ نہ ہو نمبر تین کے ہاں بچوں کی پیدائش میں آسانی ہو جن عورتوں میں یہ نشانیاں پائی جاتی ہیں وہ بہت ہی بابرکت ہوتی ہیں ناظرین وفادار اور بے وفا عورتوں کی نشانیوں کے بعد آپ کے ساتھ حضرت علی کرم اللہ وجہ الکریم کے کچھ خوبصورت اقوال بھی پیش کرتے ہیں علی رضی اللہ انہوں نے فرمایا فتنہ و فساد میں اس طرح رہو جس طرح

اونٹ کا وہ بچہ جس نے ابھی اپنی عمر کے دو سال ختم کئے ہوں کہ نہ تو اس کی پیٹھ پر سواری کی جاسکتی ہے نہ اس کے تھنوں سے دودھ جاسکتا ہے ایک اور جگہ حضرت علی رضی اللہ عنہ نے فرمایا جو شخص اپنے آپ کو بہت پسند کرتا ہے وہ دوسروں کو ناپسند ہو جاتا ہے اور صدقہ کامیاب دوا ہے میں بندوں کے جو اعمال ہیں وہ آخرت میں ان کی آنکھوں کے سامنے ہوں گے ایک اور جگہ سے خدا نے فرمایا انسان تعجب کے قابل ہے کہ وہ چربی سے دیکھتا ہے گوشت کے لوتھڑے سے بولتا ہے اور ہڈی سے سنتا ہے اور ایک سوراخ سے سانس لیتا ہے علم کے شہر نے ایک اور جگہ فرمایا لوگوں سے اس طرح ملو گے اگر مر جاؤں تو تم پر روئے اور زندہ رہو تو تمہارے مشتاق ہوں حضرت علی نے فرمایا دشمن پر قابو پاؤ تو اس پر قابو پانے کا شکرانہ اس کو معاف کر دینا کر اردو ایک اور جگہ فرمایا عقلمند کا سینہ اس کے بھیدوں کا مخزن ہے اور کشادہ روئی محبت و دوستی کا پھندا ہے اور تحمل و بردباری عیبوں کا مدفن ہے تو ناظرین آج کی اس ویڈیو میں ہم نے آپ سے وفادار اور بے وفا عورتوں کی نشانیاں بیان کی اور اس کے ساتھ ساتھ حضرت علی کرم اللہ وجہ الکریم کے کچھ خوبصورت اقوال بھی پیش کئے

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *