”عورت کو مرد کی عادت کیوں پڑتی کم عمر لڑکے اور لڑکیاں لازمی پڑھیں“

درحقیقت چاہے کوئی مرد ہے یا عورت ہمیشہ مخالف جنس سے بات کرنا اچھا لگتا ہے بات کرتے کرتے ہم اتنا کلوز ہوجاتے ہیں کہ ہمیں اس شخص کی عادت پڑ جاتی ہے۔ اگر وہ بات نہ کرے تو یوں لگتا ہے کہ جیسے دنیا میں کوئی رشتہ باقی نہیں رہا اس کے بغیر سانسیں رکنے لگتی ہیں۔ یہ سب محبت نہیں اس کی عادت کہلاتی ہے۔ اور عادت وقت کے ساتھ ہی جاتی ہےجن کو لگتا ہے کہ محبت کو صرف محسوس کیا جاسکتا ہے تو میں کچھ کہنا چاہتا ہوں۔

اگر کوئی انسان آپ کے قدر کرے آپ کووقت دے آپ کو سمجھائے آپ کا بہتر سوچےآپ کو درست مشورہ دے آپ کو جھوٹے خواب نادکھائے حقیقت پسند ہو وہ آپ سے سچی محبت کرتا ہے۔ کیونکہ محبت میں جھوٹ بولنے کی گنجائش نہیں ہوتی اور وہ جھوٹ بولے وہ محبت نہیں کر سکتا اگر کوئی شخص آپ کی بات چپ چاپ مان جاتا ہو آپ روٹھ جائیں وہ منا لیتا ہو۔ آپ کا خیال رکھے آپ تکلیف میں ہوں وہ چاہے آپ کے پاس نا ہو لیکن آپ کا حال چال پوچھے آپ کو پریشان دیکھ کر خود پریشان ہوجائے

تو وہ شخص آپ سے سچی محبت کرتا ہے۔ جوشخص آپ کی ہر خوشی میں خو ش ہوجائے آپ کا مسکراتا چہرہ دیکھ کر وہ چہکے اور آپ کو اداس دیکھ کر اس کی جان نکلنے لگ جائے آپ روئیں تو اس کی آنکھیں نم ہوجائیں تو سمجھ لیں اس کے دل میں آپ کے لیے محبت ہے۔ جو شخص آپ میں وہ خوبیاں بتائے جو آپ میں ناہوں خوابوں کی دنیا میں لے جائےآپ کی تعریف کرتے نا تھکتا ہو آپ سے ہر بات چھپائے اور وہ سب کچھ آپ کو دوسروں سے پتا چلے تو یادرکھیں وہ محبت نہیں کرتا۔ جو بات بات پر چھوڑ دینے کے بات کرتا ہو یاد رکھیں وہ آپ کو ضرور چھوڑ دے گا۔

ایسے لوگو ں سے بچیں۔ جو لوگ محبت کے نام پر رشتے توڑتے ہیں ۔ دلوں کوتوڑتے ہیں بے سکون کرتے ہیں وہ لوگ محبت نہیں کرتے کیونکہ محبت تو رشتوں کو جوڑتی ہے۔ جو شخص آپ کو اپنی ذات کی سچائی سونپ دے تو یاد رکھیں وہ آپ پر اعتبارکر رہا ہے اور اعتبار کا دوسرا نام محبت ہی تو ہے محبت میں شادی ضروری نہیں ہوتی ۔ عزت ضروری ہوتی ہے۔ بعض لوگ شادی کو منزل سمجھ لیتے ہیں اگر شادی ہی منزل ہوتی تو کبھی لو میرج کے بعد طلاق نہ ہوتی۔

احترام کا رشتہ بھی محبت ہی ہوتا ہے کسی کو اچھے الفاظ میں یاد کرنا بھی محبت ہےکسی کی کئیر کرنا بھی محبت ہے اس لیے محبت کیجیے ۔ والدین بچوں سے کرتے ہیں۔ وہ بھی تو محبت ہی ہے محبت بانٹیں ۔ دلوں کو سکون دیں عادت کے نام پر محبت کو بدنام نہ کریں۔ کیونکہ کسی کی عزت کی خاطر دو قدم پیچھے ہٹ جانا بدنام نہ کرنا یہ بھی محبت ہی ہے جو کہتے ہیں محبت ایک بار ہوتی ہے۔ ان کو میں یہ کہنا چاہتا ہوں کہ محبت بار بار ہوتی ہے۔ اس لیے محبت بانٹیں کیونکہ انسان کے برتن میں جو کچھ ہوتا ہے وہی وہ بانٹتا ہے

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *