حسین سے حسین عورت کی بھی ایک چیز بڑی ہو جاۓ تو مرد اس سے دور بھاگتا ہے

محبت واحد جنگ ھے جو ہتھیار ڈال کر جیتی جاتی ہے خوبصورت عورت کی احمقانہ باتیں بھی الہام کا درجہ رکھتی ہے

جاهل انسان کو دلیل دینا اپنے آپ کو ذلیل کرنے کے برابر ہے ۔ منافق ہر بھیڑیے کے ساتھ حملہ آور ہو تا ہے اور ہر چرواہے کے ساتھ روتا ھے

بہت زیادہ میسر رہوں گے تو عزت اور اہمیت دونوں ہی کھو دوگے مناسب فاصلوں میں ہی عزت ہے ۔ نہ جانے وہ کون سے انجان فلاسفر ہے جنہیں محبت میں مردوزن کے علاوہ کچھ نظر نہیں آتا ۔

محبت تو محبت ہوتی ہے اسے اپنے ہونے سے غرض ہوتا ہے اس لیے اکثر یہ کم ظر فوں سے بھی ہو ہی جاتا ہے اور میں محبت کم سزاز یادہ ہوتی ہے ۔

اور جن سے محبت کی جاۓ انہیں حاصل نہ کرنے کے بعد ان کا برا نہیں سوچا کرتے کیونکہ یہ محبت کی تولیت ہے ۔ کبھی کبھار ادھوری محبت مکمل سکون ہوتی ہے جبکہ بعض اوقات مکمل مل جانے والی محبت عمر بھر کا روگ بن جاتی ہے ۔

احتیاط کے قابل لوگوں پر اعتبار کرنے کا نتیجہ یہ نکلتا ہے کہ اعتبار لوگوں سے بھی ہم احتیاط بر تناشر وع کر دیتے ہیں ۔ حسین سے حسین عورت بھی اگر زبان دراز ہو تو مر دایسی عورت سے دور ۔ بھاگتا ہے

یہ نفسانفسی کا عالم ہے یہاں اداکار تو ملتے ہیں وفادار نہیں ملتے ۔ ہم سخت مزاج تب بنتے ہیں جب لوگ بار بار ہماری نرم مزاجی کا فائدہ اٹھاتے ہیں ۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.