شہریت دلوانے کے لیے انوکھے کام کر ڈالے

کویتی باشندوں نے غیر ملکیوں کو شہریت دلوانے کے لیے انوکھے کام کر ڈالے
ٰایک کویتی نے آٹھ غیر ملکیوں کو بیٹے ظاہر کر کے شہریت دلوائی، ایک کویتی نے اپنے سے 11 سال چھوٹے غیر ملکی کو بیٹا ظاہر کر ڈالا

کویت(24 اکتوبر2020ء) کویت میں غیر ملکیوں کے خلاف کریک ڈاؤن تیزی سے جاری ہے۔ اس دوران جعلی طریقوں سے شہریت حاصل کرنے والوں کے گرد بھی گھیرا تنگ کیا جا رہا ہے۔ اس حوالے سے ایسے ایسے دلچسپ اور مضحکہ خیز واقعات سامنے آئے ہیں جن پر ہر کوئی دل کھول کر ہنس رہا ہے۔ کویتی میڈیا کے مطابق بہت سے کویتی افرادلمبی رقم کمانے کے چکروں میں غیر ملکیوں کو اپنی اولاد ظاہر کر کے انہیں شہریت دلوا رہے ہیں۔
تاہم کئی افراد پیسے کے لالچ میں اہم حقائق ہی نظر انداز کر ڈالتے ہیں۔ کویتی عدالتوں میں شہریت کے حصول سے متعلق کیسز میں ایسی کئی جعلسازیوں اور جھوٹی گواہیوں کا انکشاف ہوا ہے۔ عدالتی اہلکاروں کے مطابق ایک کویتی شہری نے کسی غیر ملکی کو اپنا بیٹا ظاہر کر کے شہریت دلوانے کی کوشش کی ، جو اس سے صرف 11 سال چھوٹا تھا۔جب جج صاحب نے حیران ہو کر کویتی سے پوچھا کہ شادی کے وقت آپ کی عمر کیا تھا تو اس نے جواب دیا کہ میں دس سال کی عمر میں ہی بالغ ہو چکا تھا، اس لیے میری اسی سال شادی کر دی گئی۔
اگلے سال میرا بیٹا پیدا ہو ا تھا۔ ایک اور کیس میں شہری نے 21 غیر ملکیوں کو اپنا بیٹا ظاہر کر کے انہیں شہریت دلوائی۔ کویت نے اس سودے بازی کے بدلے میں ہر ایک غیر ملکی سے 40 ہزار درہم وصول کیے اور ہر ایک کو پابند کیا کہ اسے ساری زندگی 200 دینار ماہانہ ادا کرنا ہوں گے۔ راز فاش ہونے پر ان 21 غیر ملکیوں کو دی گئی شہریت واپس لے لی گئی اور سب کو 10، 10 سال قید کی سزا سُنائی گئی۔

Sharing is caring!

Comments are closed.