برطانوی رکن پارلیمنٹ لارڈ نذیر نے ریٹامنٹ لے لی

برطانوی رکن پارلیمنٹ لارڈ نذیر نے اپنی اہلیہ کی خاطر ہاوس آف لارڈز سے ریٹامنٹ لے لی

لندن(مجتبیٰ علی شاہ )برطانوی ہاوس آف لارڈ کے پہلے مسلمان رکن لارڈ نذیر احمد نے ہاوس آف لارڈز سے ریٹائرمنٹ لے لی۔ ذرائع کے مطابق لارڈ نذیر احمد کی اہلیہ کینسر کی مریضہ ہیں اور وہ گزشتہ ڈیڑھ برس سے رادھرم میں اپنی اہلیہ کے ہمراہ قیام پذیر ہیں۔ لارڈ نذیر احمد نے اس دوران ہاوس آف لارڈزمیں حاضری نہیں دی۔ لارڈ نذیر احمد نے کینسر کی مریضہ اہلیہ کے ہمراہ مکمل وقت گزارنے کیلئے ہاوس آف لارڈز سے ریٹائرمنٹ لینے کا فیصلہ کیا اور آج ہاوس آف لارڈز نے انکی ریٹائرمنٹ کی منظوری دے دی ہے۔ اس سال فروری سے لے کر اب تک ہاوس آف لارڈز کے بیس ممبران ریٹائرمنٹ لے چکے ہیں۔ ریٹائرمنٹ کے بعد بھی لارڈ کا ٹائٹل لارڈ نذیر احمد کے پاس رہے گا اور ہاوس آف لارڈزکا پاس بھی ان کے پاس ہو گا تاہم وہ قانون سازی کے عمل میں حصہ نہیں لے سکیں گے۔لارڈ نذیر احمد 1998 میں لیبر پارٹی کی طرف سے لارڈ منتخب کئے گئے اور وہ ہاوس آف لارڈز میں گزارے اپنے وقت کے دوران پاکستان اور کشمیر کیلئے بھرپور آواز اٹھاتے رہے۔ لارڈ نذیر احمد نے فلسطین، روہنگیا، یمن، شام، افغانستان اور عراق سمیت دنیا بھر میں مسلمانوں کے حق میں بھی آواز بلند کی۔

 

Sharing is caring!

Comments are closed.