پاکستانیوں کو خبردار کردیا

امارات میں مقیم پاکستانی سوشل میڈیا صارفین کو مقامی قوانین کی پابندی کرنے کی ہدایت

متحدہ عرب امارات میں پاکستانی شہریوں کو بلا وجہ سوشل میڈیا استعمال کرنے سے گریز کرنے کی ہدایت، پاکستانی سفارت خانے نے متحدہ عرب امارات میں مقیم پاکستانیوں کو خبردار کردیا
ابو ظہبی ( 20 نومبر2020ء) متحدہ عرب امارات میں موجود پاکستانی سفارتخانے کی جانب سے پاکستانی سوشل میڈیا صارفین کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ سوشل میڈیا کا استعمال کرتے وقت مقامی امارات اور اپنے ملک کے قوانین کی پابندی کریں۔ تفصیلات کے مطابق ابو ظہبی میں پاکستانی سفارت خانے نے متحدہ عرب امارات میں مقیم پاکستانیوں سے کہا ہے کہ وہ سوشل میڈیا کا استعمال کرتے وقت میزبان ملک اور اس کے متعلقہ مقامی قوانین (قواعد و ضوابط) کی پابندی کریں۔ سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری ایک پیغام میں پاکستانی سفارت خانے کی جانب سے کہا گیا ہے کہ متحدہ عرب امارات میں مقیم پاکستانیوں سے کہا ہے کہ وہ سوشل میڈیا کا استعمال کرتے وقت میزبان ملک اور اس کے متعلقہ مقامی قوانین (قواعد و ضوابط) کی پابندی کریں، اور سوشل میڈیا پر غیر متعلقہ سرگرمیوں سے گریز کریں۔’اگر کسی پاکستانی کو کوئی مسئلہ پیش آتا ہے تو وہ ابو ظہبی میں پاکستان کے سفارت خانے کے ان فون نمبروں پر اطلاع کرے۔
‘ فون نمبر: 0097124447800 واٹس ایپ نمبر: 00971569948924
واضح رہے کہ متحدہ عرب امارات نے تارکین وطن کے لیے داخلی و خارجی پالیسی تبدیل کردی ہے ۔ اس حوالے سے وزیراعظم کے نمائندہ خصوصی مذہبی ہم آہنگی علامہ طاہر اشرفی نے کہا کہ یواےای نے ماضی اور حالیہ ایام میں کچھ فیصلے کیے ہیں۔ کسی بھی ملک کو مداخلت کا کوئی اختیار نہیں، وہاں پر مقیم پاکستانی ان قوانین پر عمل کریں، وزیراعطم پاکستانیوں کے مسائل کے حل کیلئے کوشش کر رہے ہیں۔انہوں نے اپنے بیان میں کہا کہ متحدہ عرب امارات برادر اسلامی ملک ہے۔ متحدہ عرب امارات کے پاکستان کے ساتھ مضبوط اور مستحکم تعلقات ہیں۔ متحدہ عرب امارات کے فیصلوں میں کسی ملک کو مداخلت کا کوئی اختیار نہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہر ملک اپنے حالات اور واقعات کے مطابق اپنی داخلہ اورخارجہ پالیسی بناتا ہے۔ یواےای نے اپنی داخلہ اور خارجہ پالیسی کے مطابق ماضی، حالیہ ایام میں فیصلے کیے ہیں۔کسی بھی ملک کے شہری یا ملک کو مداخلت کا کوئی اختیارنہیں اور نہ ہونا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ یواے ای میں رہنے والے پاکستانیوں سے گزارش ہے کہ وہ جس مقصد کیلئے گئے ہیں وہ اپنا کام کریں۔ عمران خان مشرق وسطیٰ میں رہنے والے پاکستانیوں کے مسائل کے حل کیلئے کوشش کر رہے ہیں۔ طاہر اشرفی نے کہا کہ پاکستانی یواےای کی داخلہ اور خارجہ پالیسی سے متعلق ایسا عمل نہ کریں جو وہاں کے قوانین کی خلاف ورزی ہو۔ یواےای میں رہنے والے پاکستانی وہاں کے قوانین پرعمل کریں۔ یواےای میں رہنے والے پاکستانی وہاں کی داخلہ اور خارجہ پالیسی سے متعلق کوئی سرگرمی اختیار نہ کریں۔

Sharing is caring!

Comments are closed.