سعودی عرب کو جانے والے پاکستانی

سعودی عرب کو جانے والے پاکستانیوں کو اہم ہدایت کر دی گئی

سعودی وزارت صحت نے توکلنا موبائل ایپ میں رجسٹریشن کے چھ مراحل کی وضاحت کر دی
ریاض( 21 نومبر2020ء ) سعودی حکومت کی جانب سے توکلنا ایپ میں اندراج کے لیے مقامی اور غیر ملکی افراد کو اہم ہدایات کر دی گئی ہیں۔ سعودی وزارت صحت کے مطابق توکلنا ایپ میں رجسٹریشن کے لیے خواہش مندوں کا سعودی عرب میں ہونا لازمی ہے۔ توکلنا ایپ کے مطابق زائرین کو توکلنا میں اندراج کے لیے پہلی بنیادی شرط ان کی سعودیہ میں موجودگی ہے۔ جس کے بعد انہیں اپنا پاسپورٹ نمبر، تاریخ پیدائش، قومیت، موبائل نمبر اور پاس ورڈ کا اندراج کرنا ہو گا۔ توکلنا ایپ فی الحال صرف آئی او ایس( ایپل آپریٹنگ سسٹم )کے ورژن 10.0 اور اس سے اوپر کے ورژنز کے علاوہ اینڈرائڈ آپریٹنگ سسٹم کے ورژن (6.0) اور اس سے اوپر کے ورژنز کے لیے دستیاب ہے۔واضح رہے کہ سعودی عرب واپس آنے والے تارکین وطن اور مقامی باشندوں کا ایئرپورٹ پر اُترتے ساتھ ہی پی سی آر ٹیسٹ لیا جائے گا اور انہیں تین دن کے لیے گھریلو قرنطینہ میں رہنا ہو گا، اس کے علاوہ سعودی عرب سے بیرون ملک سفر کرنے والوں کو بھی پی سی آر ٹیسٹ کروانا ہوگا۔ اگر ان کے ٹیسٹ کا رزلٹ مثبت آ گیا تو پھر انہیں سات روز تک گھریلو قرنطینہ میں رہنا ہو گا۔ اور اس دوران صحت سے متعلق ’تطمن‘ اور’توکلنا‘ ایپس بھی استعمال کرنا ہوں گی۔واضح رہے کہ سعودی سول ایوی ایشن نے پاکستان میں موجود ان لیبارٹریوں کی فہرست جاری کر دی ہے جن کے ٹیسٹ قبول کئے جائیں گے۔کراچی میں آغا خان، سول ہسپتال، ڈاوٴ ہسپتال اور انڈس ہسپتال کی لیبارٹریاں،سلام آباد کے قومی ادارہ صحت کی وائرولوجی لیب ، لاہور میں پرائمری اینڈ سیکینڈری ہیلتھ ڈیپارٹمنٹ، شوکت خانم اور چغتائی لیب، ملتان میں نشتر ہسپتال کی لیب ، پشاور سے خیبر میڈیکل یونیورسٹی کی پبلک ہیلتھ لیب ،کوئٹہ کی سرکاری موبائل لیبارٹری اور ایف جے سی اینڈ جی ہسپتال کی لیبارٹری، سکھر کے گمبٹ انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز، مظفر آباد کے عباس انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز اور گلگت بلتستان کے ڈی ایچ کیو ہسپتال کی لیبارٹریوں کے نتائج سعودی اتھارٹی کے لیے قابل قبول ہوں گے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.