بچوں کی پیدائش کے بارے میں

بچوں کی پیدائش کے بارے میں حضور صلی الله علیه وسلم کا ایک قصہ

حضور اکرم صلی الله علیه وسلم کا فرمان جب آپ کو حضرت فاطمہ رِض کی خوشخبری دی گئی کہ ریحان (خوشبو کا نام) ہے۔ جو میں سونگ رہا ہوں اور اس کا رزق اللہ پر ہے (یعنی آنے والا بچہ اپنے ساتھ اپنا رزق بھی لاتا ہے۔ میاں بیوی کو رزق کا خوف نہیں کرنا چاہئیے۔خلیفہ چہارم سیدنا حضرت علی المرتضیٰ رضی اللہ تعالیٰ عنہ کے فضائل و مناقب اور کردار و کارناموں سے تاریخ اسلام کے اوراق روشن ہیں۔ جس سے قیامت تک آنے والے لوگ ہدایت و راہنمائی حاصل کرتے رہیں گے۔حضرت سعد ابن ابی وقاص رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے روایت ہے کہ حضور صلی الله علیه وسلم نے حضرت علی رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے فرمایا کہ تم میری طرف سے اس مرتبہ پر ہو ۔جس مرتبہ پر حضرت ہارون علیہ السلام، حضرت موسیٰ علیہ السلام کی طرف سے تھے۔ مگر بات یہ ہے کہ میرے بعد کوئی نبی نہ ہو گا۔ (بخاری و مسلم)آپ کا نام علی، لقب حیدر و مرتضیٰ، کنیت ابو الحسن اور ابو تراب ہے۔ آپ کا نسب حضور صلی الله علیه وسلم کے بہت قریب ہے، آپ کے والد ابو طالب اور حضور صلی الله علیه وسلم کے والد ماجد حضرت عبد اللہ دونوں حقیقی بھائی ہیں۔ آپ کی والدہ فاطمہ بنت اسد تھیں۔ ماں اور باپ دونوں طرف سے آپ ہاشمی ہیں۔ سیدنا حضرت علی رضی اللہ تعالیٰ عنہ میں ہاشمی سرداروں کی تمام خصوصیات موجود اور چہرے سے عیاں تھیں۔عبادت و ریاضت کے آثار بھی چہرے پر موجود تھے۔۔۔۔۔بدن دوہرا، قدمیانہ، چہرہ روشن و منور، داڑھی گھنی اور حلقہ دار، ناک بلند، رخساروں پر گوشت، غلافی اور بڑی آنکھیں پیشانی کشادہ، کاندھے بھاری اور چوڑے، بازو اور کلائیاں گوشت سے بھری ہوئیں، سینہ چوڑا، چہرہ پر مسکراہٹ اور پیشانی پر سجدے کے نشان معمولی لباس زیب بدن فرماتے، آپ کا عبا اور عمامہ بھی سادہ تھے، گفتگو علم و حکمت اور دانائی سے بھرپور ہوتی بچپن سے نہ صرف حضورصلی الله علیه وسلم کے ساتھ رہے بلکہ آپ صلی الله علیه وسلم ہی کی آغوشِ محبت میں پرورش پائی، آپ صلی الله علیه وسلمنے ان کے ساتھ بالکل فرزند کی طرح معاملہ کیا اور اپنی دامادی کا شرف بھی عطا فرمایا، حضور صلی الله علیه وسلم کی سب سے چھوٹی اور لاڈلی بیٹی خاتونِ جنت سیدہ حضرت فاطمة الزہرارضی اللہ تعالیٰ عنہا کے ساتھ آپ کا نکاح ہوا اور ان سے آپ کی اولاد ہوئی

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *