سعودی عرب میں مقیم پاکستانی

سعودی عرب میں مقیم پاکستانی کارکنان ہوشیار ہو جائیں
وزارت داخلہ نے کورونا ایس او پیز کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف قانونی کارروائی کا اعلان کر دیا

ریاض (۔25جنوری2021ء) سعودی وزارت داخلہ کے ترجمان لیفٹیننٹ کرنل طلال الشلھوب نے کہا ہے کہ ’کرونا سے بچاوٴ کے لیے مقرر ایس او پیز کی خلاف ورزیوں پر کڑی نظر رکھی جا رہی ہے۔ کسی کے ساتھ بھی کوئی رعایت نہیں ہوگی‘۔وزارت داخلہ کے ترجمان نے اتوار کو ریاض میں پریس کانفرنس میں کہا کہ’ آئندہ دنوں میں حفاظتی ماسک استعمال نہ کرنے اور حد سے زیادہ افراد کے اجتماع کا سختی سے نوٹس لیا جائے گا اور اس کی پابندی پوری قوت سے کرائی جائے گی‘۔

saudia

العربیہ نیوز کے مطابق انہوں نے کہا کہ ’بعض لوگ اس حوالے سے لاپروائی برت رہے ہیں جس کا نتیجہ کرونا کے کیسز میں اضافے کی صورت میں سامنے آ رہا ہے‘۔وزارت داخلہ کے ترجمان نے بتایا کہ ’سب کا مفاد اسی میں ہے کہ ایس او پیز کا خیال نہ کرنے والے اجتماعات سے دور رہیں۔وائرس سے بچاوٴ کے لیے مقرر ضوابط کی انتہا درجے پابندی کریں۔ افراد اور ادارے سب اپنی جگہ مقررہ ہدایات کا احترام کریں‘۔کرنل الشلھوب نے شہریوں اور مقیم غیر ملکیوں سے پھر کہا کہ ’وہ جہاں بھی اور جس وقت بھی کورونا ایس او پیز کی خلاف ورزی کا کوئی واقعہ دیکھیں تو فوری طور پر 999 پر رابطہ کرکے مطلع کریں۔ اس نمبر پر مملکت کے کسی بھی علاقے سے رابطہ کیا جاسکتا ہے البتہ مکہ مکرمہ اور ریاض ریجنوں کے باشندوں کے لیے رابطہ نمبر 911 مقرر کیا گیا ہے‘۔علاوہ ازیں وزارت داخلہ نے ٹوئٹر پر بیان میں بتایا کہ’ گذشتہ ایک ہفتے کے دوران کورونا ایس او پیز کی 18033 خلاف ورزیاں ریکارڈ پر آئیں‘۔سب سے زیادہ خلاف ورزیاں ریاض (5343) ، دوسرے مکہ (3028) تیسرے شرقیہ (2236) چوتھے قصیم (1798) پانچویں مدینہ منورہ (1495)، چھٹے باحہ (1422)، ساتویں الجوف (1117) آٹھویں تبوک (521)، نویں حائل (391)، اور عسیر (318) خلاف ورزیوں کے ساتھ دسویں نمبر پر رہا۔

Sharing is caring!

Comments are closed.