”رات سونے سے پہلے اس چیز کا ایک چمچ کھا لیں“

”رات سونے سے پہلے اس چیز کا ایک چمچ کھا لیں“

نبی ﷺ سرین پر بیٹھتے تھے یہ جب ہم پیشا ب کرنے کے لیے بیٹھتے ہیں ۔ جو چاہتے ہیں کہ ان کے مثانے کبھی کمزور نہ ہوں جو نبی ﷺ آخری تشاہد کرتے وقت بیٹھتے تھے وہ کس پر بیٹھتے تھے اپنی سر ین پر۔ دراصل ہم نے اسلام کو بہت پیچھے چھوڑ دیا ہے جس کی وجہ سے ہماری زندگی میں طرح طرح کی بیماریوں اور پریشانیوں نے ہماری زندگی کو گھیر رکھا ہےہم کسی بھی مسئلے میں کا میاب نہیں ہو پاتے کیو ں کہ ہمارا ایمان جو کمزور ہو چکا ہے ہم کوئی بھی اسلامی ہمیں کوئی بھی اسلامی فوائد کے متعلق بات بتانے لگتا ہے تو ہم کہتے ہیں کہ ہم سوچتے ہیں کہ آیا کہ اس میں ہمارا فائدہ ہے بھی صحیح یا نہیں ایسا نہ کرو ۔ دیکھو اگر ایسا کرو گے

 

تو ہم ساری زندگی محروم رہ جائیں گے اور ہمارے ہاتھ کچھ بھی نہیں آئے گا تو سب سے پہلے تو ہمیں چاہیے کہ ہم ا سلام کے طرز کے مطا بق اپنی زندگیاں بسر کر یں تا کہ ہماری زندگیوں میں سکون اور اطمینان کی نئی لہر جنم لے سکے۔ ہماری زندگیوں سے سکون او ر اطمینان کچھ چھن سا گیا ہے اکثر بھا ئیوں سے میں سنتا ہوں کہ ہم پانچ وقت کی نماز بھی پڑھتے ہیں روزے بھی رکھتے ہیں اور اس کے ساتھ ساتھ جی ہم قرآنِ پاک کی تلاوت بھی کرتے ہیں زکوٰۃ بھی دیتے ہیں اللہ کو راضی کرنے کا حتیٰ کہ ہر کام کرتے ہیں لیکن ہمارے دلوں میں وہ سکون کی فضا پیدا نہیں ہو پا رہی کہ جو ہونی چاہیے ہم چو بیس گھنٹے ہی بے چین رہتے ہیں ہمیں سکون مل ہی نہیں پا تا

 

تو ایسا کیوں ہے۔ ایسا صرف اور صرف اس لیے ہے کہ ہم نے اسلام پر اعتماد اسلامی تعلیمات پر اعتماد کر نا چھوڑ دیا ہے جس کی وجہ سے ہماری زندگیوں میں یہ تمام قسم کی پریشانیاں آ رہی ہیں۔ تو ہمیں سب سے پہلے چاہیے کہ ہم کامل یقین کے ساتھ اسلامی طریقہ کار کے مطابق زندگی گزارنے کا عمل پیدا کریں پھر دیکھئے گا کہ ہمارا ہر کام آسان ہو جا ئے گا۔ پہلا کام یہ کر نا ہے کہ آپ تشاہد میں اس طرح ہی بیٹھیں گے کہ جس طرح میرے آقا نبی پاک ﷺ بیٹھتے تھے۔ اور دوسرا کام یہ کر نا ہوگا کہ مثانے کی کوئی بھی کسی بھی قسم کا مسئلہ ہے۔

 

تو اس کے لیے اس مسئلے کو اس بیماری کو دور کرنے کے لیے نبیض پیو نبیض کسے کہتے ہیں۔ نبیض اس کو کہتے ہیں کہ کھجوروں کو پانی میں بھگو دینا اور پھر کھجوریں نکال کر اس پانی کو پی جانا اس کو نبیض کہتے ہیں انشاء اللہ اس ٹوٹکے کر نے سے ہر طرح کی مثانے کی بیماری دور ہو جائے گی۔ اور اس سے انسان کو جو بے چینی سے ہوتی ہے اور تکلیف ہوتی ہے وہ بھی دور ہو جائے گی انشاء اللہ

 

 

 

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

error: Content is protected !!